Category «قابل اجمیری»

اب یہ عالم ہے کہ غم کی بھی خبرہوتی نہیں (قابل اجمیری)

اب یہ عالم ہے کہ غم کی بھی خبر ہوتی نہیں اشک بہہ جاتے ہیں لیکن آنکھ تر ہوتی نہیں پھر کوئی کم بخت کشتی نذرِ طوفاں ہو گئی ورنہ ساحل پر اداسی اس قدر ہوتی نہیں تیرا اندازِ تغافل ہے جنوں میں آج کل چاک کر لیتا ہوں دامن اور خبر ہوتی نہیں ہائے …