غزل (باقی صدیقی)

چیں بر جبیں ہو

کتنے حسیں ہو

 

اتنی خموشی !

گویا نہیں ہو

 

وہ مہرباں ہیں

کیوں کر یقیں ہو

 

یہ ہے بے حجابی

پردہ نشیں ہو

 

جیسا سنا تھا

ویسے نہیں ہو

 

سوچو تو باقی

سب کچھ تمہیں ہو

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *